News Image
News Image 1
Islamabad, June 13, 2018:  The Secretary Planning, Development & Reform (PD&R), Shoaib Ahmad Siddiqui has said that China Pakistan Economic Corridor (CPEC) being a long-term national project has to play a huge role in the development of remote regions of the country particularly Balochistan.
He expressed these views while chairing a meeting on CPEC issues on Wednesday here at Ministry of Planning, Development & Reform. The meeting was attended by Project Director CPEC, Hassan Daud Butt, Officials from Ministry of Energy (Power Division), Government of Balochistan and Government of Sindh. 
Secretary PD&R instructed for making all-out efforts for resolution of outstanding issues. 
Mr. Siddiqui, while highlighting the importance of Gwadar development as a modern world-class port city, emphasized on creating اa conducive environment for investment as the investors are keenly watching development at Gwadar.
On this occasion, representative of Balochistan Government intimated that the process of issuance of NOCs and land acquisition for 300 MW Coal Power Project has been expedited. “Completion of the process is expected shortly that would facilitate the power project to enter into implementation stage”, he informed. 
 Officials from Ministry of Energy apprised regarding the progress of power projects under CPEC. The chair instructed for expediting procedures to ensure smooth implementation of CPEC projects and win investors’ confidence.
اسلام آباد، 13جون، 2018
 سیکرٹری منصوبہ بندی، ترقی و اصلاحات شعیب احمد صدیقی نے کہا ہے کہ سی پیک کی بدولت  پاکستان کے دورآفتادہ علاقے ترقی کے نئے دور میں داخل ہوں گے، پاکستان کے تمام علاقے باالخصوص صوبہ بلوچستان اس منصوبے سے پوری طرح مستفید ہوگا، ان خیالات کا اظہار انہوں نے سی پیک کے حوالے سے بلائے گئے اجلاس سے خطاب کے دوران کیا، اجلاس میں پراجیکٹ ڈائریکٹر سی پیک حسان داود، وزارت توانائی، حکومت بلوچستان اور سندھ کے سنئیر افسران شرکت کی، اس موقع پر سیکرٹری پلاننگ نے تمام اداروں کو ہدایت کی کہ سی پیک میں شامل منصوبوں کے حوالے سے تمام ترمعاملات کو حل کرنے کیلئےہر ممکن اقدامات یقینی بنائے جائیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ گوادر ایک جدید اور ورلڈ کلاس شہر کے طور پر ابھر رہا ہے،پوری دنیا کےسرمایہ کار یہاں ہونے والی ترقی کا انتہائی غور سے جائزہ لے رہے ہیں لہذا اس پورٹ سٹی میں سرمایہ کاری کیلئے سازگار ماحول کو فروغ دینے کیلئے تیز تر اقدامات کا سلسلہ جاری رکھا جائے۔ اس موقع پر حکومت بلوچستان کے نمائندے نے بتایا کہ گوادر شہر کی ترقی کیلئے مختلف منصوبوں پر کام جاری ہے، گوادر میں 300میگا واٹ پاور پراجیکٹ کیلئے این او سیز اور اراضی کے حصول کا عمل تیز کردیا گیا، اس عمل کی تکمیل کے ساتھ جلد ہی اس منصوبے پر عملی کام کا آغاز ہوجا ئےگا،اجلاس میں وزارت توانائی کے حکام نے شرکاء کوسی پیک منصوبوں پر جاری پیش رفت سے آگاہ کردیا، اس موقع پر سیکرٹری پلاننگ نے ہدایت کی کہ توانائی منصوبوں کے تمام معاملات کو فی الفور حل کریں تاکہ سرمایہ کاروں کا اعتماد برقرار رہے۔