News Image
News Image 1

Islamabad, Dec 13, 2018: Federal Minister for Planning, Development & Reform (PD&R) Makhdum Khusro Bakhtyar met Chief Minister of Balochistan Jam Kamal Khan at Balochistan House here on Thursday.

Senators and Members National Assembly from Balochistan were also present on the occasion.

Both the leaders discussed preparation and agenda for the next Joint Cooperation Committee meeting of China Pakistan Economic Corridor (CPEC), scheduled on 20th of December, next week at Beijing, China.

Western Route is one of the important projects of CPEC and its Zhob-D I Khan section is part of JCC agenda, highlighted Minister PD&R. He said that implementation of the project would open up and ensure socio-economic development of the remote regions of Khyber Pakhtunkhwa and Balochistan.

Minister further said that substantial progress is expected on Gwadar projects during 8th JCC. Implementation of four important projects of Gwadar including New Gwadar Airport, Hospital, Technical Institute and 300 MW Power Plant projects is important deliverable of the forthcoming CPEC apex body meeting.

Minister further said that Pakistan and China have agreed to initiate socio-economic development projects in the less developed areas of the country under CPEC where in Balochistan would be given adequate share. Projects in this important sector would be implemented during next three years, he added.

Minister highlighted that mega projects in infrastructure and water sectors in Balochistan would also be implemented through public sector development program (PSDP).

The Chief Minister Balochistan Jam Kamal Khan has expressed satisfaction over inclusion of Western Route project in the agenda of JCC. He said that completion of CPEC infrastructure and social sector projects with the support of Federal Government would pave a way for the development of Balochistan. He said that construction of water sector projects would help to control severe water scarcity in this province.

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقی و اصلاحات مخدوم خسرو بختیار کی وزیر اعلی بلوچستان جام کمال سے ملاقات

ملاقات بلوچستان ہاوس اسلام آباد میں ہوئی ملاقات میں بلوچستان سے تعلق رکھنے والے سینیٹرز و ارکان قومی اسمبلی بھی موجود تھے۔ ملاقات میں 20 دسمبر کو ہونے والی سی پیک جے سی سی کی تیاریوں کا جائزہ لیا گیا۔ بلوچستان کی ترقی حکومت کی اہم ترجیحات میں شامل ہے، وفاقی وزیر مخدوم خسرو بختیار

مغربی روٹ سی پیک کا اہم منصوبہ ہے۔ وفاقی وزیر مخدوم خسرو بختیار مغربی روٹ کا ژوب ڈیرہ اسماعیل خان سیکشن کا منصوبہ جائنٹ کو آپریشن کمیٹی ایجنڈے میں شامل ہے۔ وفاقی وزیر

اس شاہراہ کی تعمیر سے بلوچستان اور خیبر پختونخوا کے دور افتادہ علاقوں کی ترقی ممکن ہوگی۔ جے سی سی اجلاس میں گوادر منصوبوں پر اہم پیش رفت ہوگی۔ وفاقی وزیر

سی پیک کے تحت سماجی شعبے میں ترقی کے کئی منصوبے شروع کئے جائیں گے۔وفاقی وزیر سماجی شعبے کے منصوبوں میں بلوچستاں کو مناسب حصۃ دیا جائے گا، وفاقی وزیر

سماجی شعبے کے منصوبوں کو تین سال کےعرصے میں عملی جامہ پہنایا جائے گا۔ وفاقی وزیر

سماجی شعبے کےتحت ملک کے پسماندہ علاقوں بشمول بلوچستان کی ترقی پر پوری توجہ دی جائے گی۔ پی ایس ڈی پی کے تحت بھی بلوچستان کے اندر انفراسٹرکچر و ڈیمز کے منصوبے مکمل کئے جائیں گے

وزیراعلی بلوچستان کا سی پیک مغربی روٹ منصوبے کی جے سی سی ایجنڈے میں شمولیت پراظہاراطمینان سماجی شعبے کے منصوبوں سے بلوچستان کی ترقی ممکن ہوگی۔ اس ضمن میں وفاقی حکومت کی تعاون کی اشد ضرورت ہے۔ وزیر اعلی

بلوچستان میں ڈیمز منصوبوں سے پانی کے شدید بحران پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔ وزیر اعلی بلوچستان میں سی پیک انفراسٹرکچر منصوبوں کی تکمیل سے پسماندہ علاقوں میں ترقی ممکن ہوگی۔ وزیر اعلی